وصف

منہاج المسلم (تحقیق وتخریج سے مزیّن جدید ایڈیشن): بعض کتابیں اپنی اہمیت کے اعتبار سے نہایت مفید ہوتی ہیں۔انہیں باربار پڑھنے سے بھی دل سَیر نہیں ہوتا۔ان کے مطالعے سے ذہن کو بالیدگی اور روح کو تازگی ملتی ہے اور بھلائی کے امکانات کی ایک وسیع دنیا سامنے آتی ہے۔
’’منہاج المسلم ‘‘ایسی ہی عظیم کتابوں میں سے ایک ممتاز کتاب ہے جوسعودی عرب کے نامورعالم دین علامہ ابوبکرجابرالجزائری حفظہ اللہ کی تصنیف ہے۔
اس عظیم الشان کتاب کا اردو ترجمہ شیخ الحدیث مولانا محمد رفیق اثری حفظہ اللہ نے کیا ہے۔اس کتاب میں کتاب وسنت کی روشنی میں تمام شعبہ ہائے زندگی کے بارے میں دلوں میں اترجانے والے بیش بہا اسباق چمک رہے ہیں ۔ زبان آسان ،عام فہم اور سادہ ہے ۔عقائد ہوں یا عبادات کا بیان ،اخلاقیات کے مختلف پہلو ہوں یا اسلامی آداب وحقوق کا تذکرہ ،احکام ِتجارت ہوں یا معاشرتی معاملات، وراثت کے مسائل ہوں یا عائلی قوانین، قصاص ودیت کے اصول ہوں یا قضاء کےمسائل سبھی پر سیر حاصل بحث کی گئی ہے۔ بلاشبہ یہ کتاب دین کی تعلیمات کا ایک عظیم الشان انسائیکلوپیڈیا ہے ۔یہ کتاب ہرفرد، ہرگھراورہرلائبریری کی خاص ضرورت ہے۔اللہ کتاب کے مولف،مترجم اور جملہ ناشرین کی کاوشوں کوقبول فرماکران سب کے حق میں اسے صدقہ جاریہ بنائے اور اس کے نفع کو عام کرے آمین۔ ناشر: دارالسلام لاہور۔
نوٹ: منہاج المسلم کے قدیم اردو ترجمہ والے نسخہ میں تواضع وانکساری کی عظمت اورتکبرکی مذمّت کے باب میں ص 266 پر حدیث کا لفظ يحشرالمتكبرون يوم القيامة أمثال الذرفي صورة الدجال یعنی متکبرلوگ قیامت کے دن چینوٹیوں کی طرح اٹھائے جائیں گے حالانکہ ان کی صورت دجّال کی ہوگی، جبکہ صحیح صورالرًجال ہے يعىنی ان کی صورتیں انسانی ہوں گی جیسا کہ اس نئے ایڈیشن میں ہے۔ (ش۔ر)

فیڈ بیک