محرم کے بغیر عورت کا سفر

مُفتی : محمد صالح

وصف

مجھے علم ہے کہ عورت کے لیےایک دن اور رات کا سفرمحرم کے بغیر کرنا حرام ہے ، کیا عورت کے لیے جائز ہے کہ اسے جہاز تک محرم پہنچا آئے اورجہاز سے اترتے وقت دوسرا محرم اسے لے آئے ؟
یہ سارا سفردس گھنٹے میں ہوگا

Download
اس پیج کے ذمّے دار کو اپنا تبصرہ لکھیں

کامل بیان

    محرم کے بغیر عورت کا سفر

    سفر المرأة بغير مَحرم

    [ اردو- أردو - urdu ]

    شیخ محمد صالح المنجد

    ترجمہ: اسلام سوال وجواب ویب سائٹ

    تنسیق: اسلام ہا ؤس ویب سائٹ

    ترجمة: موقع الإسلام سؤال وجواب
    تنسيق: موقع islamhouse

    2012 - 1433

    محرم کے بغیر عورت کا سفر

    مجھے علم ہے کہ عورت کے لیےایک دن اور رات کا سفرمحرم کے بغیر کرنا حرام ہے ، کیا عورت کے لیے جائز ہے کہ اسے جہاز تک محرم پہنچا آئے اورجہاز سے اترتے وقت دوسرا محرم اسے لے آئے ؟

    یہ سارا سفردس گھنٹے میں ہوگا

    الحمد للہ

    عورت کے لیے بغیرمحرم کے سفرکرنا جائز نہيں اس کی دلیل نبی صلی اللہ علیہ وسلم کےمندرجہ ذیل فرمان کا عموم ہے :

    ( اللہ تعالی اورآخرت کے دن پرایمان رکھنے والی عورت کےلیے محرم کے بغیرسفرکرنا حلال نہيں ) ۔

    اورمحرم کی موجودگی کا ھدف اورمقصد عورت کی حفاظت اوردیکھ بھال اوراس کےمعاملہ کونپٹانا ہے اورخاص کرجب کوئي نقصان دینے والے معاملات پیدا ہوجائيں ، اورسفرتواس سے بھرا پڑا ہے اس میں مدت کونہيں دیکھا جائےگا بلکہ لوگ جسے سفر کہتے ہیں وہ اسی طرح ہے ، اوراس وقت اس پرسفرکے احکامات لاگو ہونگے ۔

    آپ محارم کے احکام کی مزید تفصیل دیکھنے کےلیے سوال نمبر ( 5538 ) کے جواب کا مطالعہ ضرور کریں ۔

    واللہ اعلم .