سواری کرنے میں نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا طریقہ

مُفتی : محمد صالح

وصف

نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی کون کون سی سواریاں تھیں جن پرسواری کرتے تھے ؟

Download
اس پیج کے ذمّے دار کو اپنا تبصرہ لکھیں

کامل بیان

    سواری کرنے میں نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا طریقہ

    هدي النبي صلى الله عليه وسلم في الركوب

    [ أردو - اردو - urdu ]

    شیخ محمد صالح المنجد

    ترجمہ: اسلام سوال وجواب ویب سائٹ

    تنسیق: اسلام ہا ؤس ویب سائٹ

    ترجمة: موقع الإسلام سؤال وجواب
    تنسيق: موقع islamhouse

    2013 - 1434

    سواری کرنے میں نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا طریقہ

    نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی کون کون سی سواریاں تھیں جن پرسواری کرتے تھے ؟

    الحمدللہ

    نبی صلی اللہ علیہ وسلم نےگھوڑے ، خچر ، اونٹ ، اورگدھے پر سواری فرمائ‏ ، کبھی تونبی صلی اللہ علیہ وسلم گھوڑے کی ننگی پیٹھ پراورکبھی کاٹھی ڈال کرسوارہوۓ ، بعض اوقات نبی صلی اللہ علیہ وسلم گھوڑے کودوڑاتے بھی تھے ، اکثرطورپر اکیلے ہی سوارہوتے اورکبھی اونٹ پر اپنے پیچھے کسی کوبٹھا بھی لیتے تھے ۔

    اورکبھی ایسی بھی حالت ہوتی کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم اپنے آگے اور پیچھے بھی کسی بٹھاتے اورخود دومیان میں ہونے تواس طرح اونٹ پرتین اشخاص بیٹھتے تھے ، اوران پیچھے بیٹھنے والوں میں مرد بھی تھے اورآپ صلی اللہ علیہ وسلم کی بعض بیویاں بھی پیچھے بیٹھنے والوں میں شامل ہیں ۔

    نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی اکثرطورپر سواری یا تواونٹ تھی اور یا پھر گھوڑا ، اورخچر کے متعلق یہ معروف ہے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس ایک ہی خچرتھا جوکسی بادشاہ نے آّپ کوھدیہ دیا تھا ، اورخچر عرب کی سرزمین پرمعروف نہیں تھے بلکہ جب نبی صلی اللہ علیہ وسلم کوخچر ھدیہ کیا گيا تویہ کہا گيا کہ :

    کیا ہم گھوڑوں سےگدھوں کی جفتی نہ کروائيں ؟ تونبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا :

    یہ کام تووہ لوگ کرتے ہیں جنہیں علم نہیں ہے ۔

    دیکھیں سنن ابوداود حدیث نمبر ( 2565 ) علامہ البانی رحمہ اللہ تعالی نے اسے صحیح ابی داود حدیث نمبر ( 2236 ) میں صحیح قرار دیا ہے ۔ .

    دیکھیں زاد المعاد لابن قیم رحمہ اللہ تعالی ( 1 / 159 )