اذان کا جواب دینے میں مشغول ہونا بہتر ہے یا افطار میں جلدی کرنا؟

وصف

سوال: كہتے ہيں كہ اذان کا سماع واجب ہے، ليكن مغرب كى اذان كے وقت افطارى كرنے والے شخص كے متعلق كيا حكم ہے، آيا كھانے ميں مشغول ہونے كى بنا پر اسے اذان كا جواب دينا معاف ہے ؟ اور فجر كى اذان كے وقت سحرى كرنےمیں اسی چیز کا کیا حكم ہے ؟

فیڈ بیک