عرفہ پہا ڑی کے پاس حجّاج و معتمرین سے صادر ہونے والی غلطیاں

وصف

جبلِ عرفات میدان عرفات کے دیگر حصوں کی طرح ایک حصہ ہے ، وقوف عرفات کے اعتبار سے اسے کوئی خاص حیثیت حاصل نہیں ۔ اس پر سفید نشان محض اسلئے لگایا گیا ہے کہ دُور سے میدان عرفات کا پتہ چل جائے، کیونکہ یہ پہاڑ میدان عرفات کے وسط میں پڑتا ہے، ایک عام غلطی یہ ہے کہ لوگ جبل عرفات کی چوٹی کے سفید نشان زدہ حصہ پر ہاتھ پھیر پھیر کر بزعم خویش برکت حاصل کرتے ہیں ، یا وہاں چیتھڑے لٹکاتے ہیں ، چوٹی پر اپنے نام یا دیگر تحریریں لکھتے ہیں ، وہاں کی مٹی اور پتّھر یہ سمجھ کر اُٹھا لاتے ہیں کہ یہ اُنہیں نفع پہنچائیں گے، ایسے تمام اعمال حرام کے زمرے میں آتے ہیں اور آدمی کو شرک پر اُکساتے ہیں ۔ ویڈیو مذکور میں انہیں غلطیوں اور غیر شرعی اعمال سے زائرین حرمین کو خبردار کیا گیا ہے۔

فیڈ بیک